Elliott Waves Theory - Fibonacci on Main and Corrective Swings

45۔ نظریہ ایلیٹ ویوز

0 0 Vote
Instructor

45۔ نظریہ ایلیٹ ویوز

فاریکس تربیتی پروگرام کی پینتالیسویں نشست

فاریکس تربیتی نشست بحوالہ مالیاتی مارکیٹس میں پھر سے خوش آمدید۔ اس نشست میں ہم تفصیل کے ساتھ ایلیٹ ویوز کا مطالعہ کریں گے۔

ایلیٹ ویوز

ایلیٹ ویوز نظریے کا زیادہ تر استعمال تکنیکی تجزیات کی ذیل میں دیکھا گیا ہے۔ یہ نظریہ یونیورسل یا کائناتی آرڈرز اور نظامات یا سسٹمز پر اپنی بنیاد رکھتا ہے۔ انسان کائنات کا ایک حصہ ہے پس انسانی رویے ہماری کائنات کے نظام سے کشید کردہ ہیں۔ نتیجتاً مالیاتی مارکیٹوں کے حوالے سے کائناتی آرڈر کا اطلاق کرتی ہیں تاکہ مستقبل کے مارکیٹی رجحان اور قیمتوں کی پیشگوئی کی جا سکے۔

ایلیٹ ویوز میں 5 بڑی اور 3 کوریکٹو سوئنگس شامل ہوتی ہیں۔ نمبر 3 5 اور 8 فائبونیکی ترتیب میں دستیاب ہوتے ہیں۔ بڑی سوئنگس 12345 ہیں جب کہ اے بی اور سی کوریکٹو سوئنگس ہیں اور بی بی کی سمت بڑے یا میجر ٹرینڈ کے ساتھ متفقہ ہوتی ہے۔ نمبرز 1 3 اور 5 بڑی سوئنگس ہیں جن کی سمت بڑے رجحان کے حوالے سے متفقہ ہے جب کہ نمبرز 2 اور 4 ریورسل میجر سوئنگس ہیں۔ سوئنگس 13 5 اور بی متفقہ ہیں اور 24 اے اور سی ریورسل ہیں۔ ایلیٹ ویوز ٹرینڈ سموتھ رپلنگ اور زیگ زیگ ہو سکتے ہیں۔ ہر سوئنگ میں اپنے سٹرکچر میں ایلیٹ ویوز پیٹرن کو بھی شامل کر سکتے ہیں۔ مثال کے طور پر اس گراف میں 34 سوئنگس ہیں۔ 34 فائبونیکی نمبر بھی ہے۔

Elliott Waves Theory - Nature Order Numbers in Forex Market Market Analysis and Prediction

سوئنگس کو ان کے حجم اور دورانیہ وقت کے حساب سے 9 درجات میں تقسیم کیا جا سکتا ہے۔

1۔ گرینڈ سپر سائیکل: ملٹی سنچری

2۔ سپر سائیکل: ملٹی ڈیکیڈ

3۔ سائیکل:ایک سالہ یا کئی سالہ

Elliott Waves Theory - Rules of Waves, Expansion - Corrective and Major Waves and Trends - Zigzag

4۔ پرائمری:چند ماہ یا کئی سال پر مشتمل

Elliott Waves Theory - Primary and Intermediate Cycle Time - Rippling, Smooth and Zigzag Swings

5۔ انٹرمیڈیٹ:ہفتے تا مہینے

6۔ مائنر:ہفتے

7۔ منٹ:دن

8۔ منٹ:گھنٹے

9۔ ذیلی منٹ: منٹس

بنیادی ایلیٹ ویوز کنڈیشنز اس طرح سے ہیں:

٭ دوسری سوئنگ کو پہلی سوئنگ کے ابتدائی پوائنٹ تک نہیں پہنچنا چاہیے

٭ چوتھے سوئنگ کو تیسرے سوئنگ کے ابتدائی پوائنٹ تک نہیں پہنچنا چاہیے

٭ تیسرے سوئنگ کو بلش فارمیٹ میں پہلی سوئنگ کی زائد قیمت کو چھونا ہو گا

٭ تیسرے سوئنگ کو بیئرش فارمیٹ میں پہلی سوئنگ کی کم قیمت کو چھونا ہو گا

٭ تیسری سوئنگ پہلی اور پانچویں سوئنگ سے کم نہیں ہو سکتی جب کہ اکثر و بیشتر یہ طویل ترین سوئنگ ہوتی ہے

٭ چوتھی سوئنگ پہلی سوئنگ کے اینڈ پوائنٹ تک نہیں پہنچنا چاہیے

سوئنگس نمبر 1 3 اور 5 ذیلی سوئنگس کے ذریعے ایکسٹنڈ ہو سکتے ہیں۔ پھیلاؤ کی حامل سوئنگ کی 5 ذیلی سوئنگس مع ایلیٹ ویوز پیٹرن ہوتی ہیں جو کہ بنیادی ایلیٹ ویوز سوئنگس کے دورانیہ وقت کے حوالے سے قابل شناخت ہوتی ہیں۔ اکثر و بیشتر تیسری سوئنگ اپنی ساخت میں ایک ایکسٹینشن رکھتی ہے۔ بایاں گراف ظاہر کرتا ہے کہ ایکسٹینشن پہلی سوئنگ پر واقع ہوئی ہے۔ درمیانی گراف تیسری سوئنگ پر ایکسٹینشن کو ظاہر کرتا ہے جب کہ دایاں گراف 5ویں سوئنگ پر ایکسٹینشن کو ظاہر کرتا ہے۔

Elliott Waves Theory - Extension Pattern in Main Swings - Bullish and Bearish Sub-swings trend

چاہے کوئی تاجر ایکسٹینشن اور مرکزی سوئنگس کو شناخت نہ کر سکے تاہم وہ اپنے تجزیے میں ان تمام نو 9 سوئنگس کو مدنظر رکھ سکتا ہے۔ ایکسٹینشنز ذیلی سوئنگس پر بھی واقع ہو سکتی ہیں۔

بعض اوقات سوئنگ نمبر 5 تیسری سوئنگ کے ہائی پوائنٹ سےاس کے اتار چڑھاؤ میں تیزی کے باعث پیچھے رہ جاتی ہے۔ پس تاجر تیسری اور پانچویں سوئنگ کو بطور ڈبل پیٹرن تصور کرتی ہے جو کہ فروختی سگنل پیدا کرتی ہے۔

اگر 5واں سوئنگ 5 ذیلی سوئنگس پر مشتمل ہو اور یہ ذیلی سوئنگس اپنے اندر ایلیٹ ویوز پیٹرن نہ رکھتی ہوں تو تاجر سوئنگس کو ٹرائی اینگل پیٹرن تصور کر سکتا ہے۔ جب رجحان بریک آؤٹ پوائنٹ کو پار کر جاتا ہے تو بلش ٹرینڈ پر فروختی آرڈر جب کہ بیئرش ٹرینڈ پر خریداری آرڈر رکھوایا جا سکتا ہے۔ اکثر اوقات ہر بڑا سوئنگ 3 ذیلی سوئنتس پر مشتمل ہو گا تاکہ ٹرائی اینگل سوئنگ تشکیل پائے جو کہ بعض اوقات ڈائورجنٹ ہو گی۔

Elliott Waves Theory - Rules of Waves, Expansion, Triangle Pattern - Support and Resistance Levels

زیادہ تر وقتوں میں دوسری یا چوتھی سوئنگ میں سے ایک پیچیدہ شکل اور ڈھانچے پر مشتمل ہو گی۔

تاجر پہلی اور تیسری سوئنگ کے خاتمہ پوائنٹس کو ٹرینڈ لائن کے ذریعے ملا سکتا ہے اور پھر دوسری سوئنگ کے ابتدائی پوائنٹ سے ایک متوازی لائن تشکیل دی جا سکتی ہے۔ پس چینل کو مدنظر رکھتے ہوئے چوتھی اور پانچویں سوئنگ کے بارے میں اندازہ قائم کیا جا سکتا ہے۔ اگر چوتھی سوئنگ طے شدہ یا ڈیفائنڈ لائن پر تشکیل نہیں پاتی چاہے سمت اوپر ہو یا نیچے ہو تاجر دوسری سوئنگ کے اینڈ پوائنٹ سے لے کر چوتھی سوئنگ کے اینڈ پوائنٹ تک ٹرینڈ لائن کھینچ سکتا ہے۔ اس کے بعد تیسری سوئنگ کے اینڈ پوائنٹ پر اس ٹرینڈ لائن کے ساتھ متوازی لائن کھینچی جا سکتی ہے تاکہ 5 ویں سوئنگ کے اینڈ پوائنٹ کے حوالے سے پیشگوئی کی جا سکے۔

Elliott Waves Theory - Zigzag, Flat, Triangle Corrective Waves - Trendline and Levels - Reversal Trading Signals

کوریکٹو سوئنگس مارکیٹ پرائس کو ریفائن کرتی ہیں اور بڑی سوئنگس کے مقابل حرکت کرتی ہیں۔ اپنی پیچیدہ صورت کے باعث کوریکٹؤ سوئنگس کو مزید غور و خوض کی ضرورت رہتی ہے۔ کوریکٹو سوئنگس کی تین اقسام ہوتی ہیں:

1۔ زگ زیگ

2۔ فلیٹ یا ہموار

3۔ ٹرائی اینگل

زگ زیگ پیٹرن 5-3-5 اوپر جاتی سمت پر قائم ہوتا ہے تاہم نیچے جاتے رجحان میں ہوتا ہے پس یہ ایک ریورسل پیٹرن ہے۔ ایک بیئرش ٹرینڈ پر یہ پیٹرن اوپر جاتی سمت میں ہو گا۔ دو 2 یا تین 3 زگ زیگ پیٹرنز اس رجحان کے حوالے سے شناخت کیے جا سکتے ہیں اگر کوئی ذیلی سوئنگ پیٹرن موجود ہو۔ پہلا رجحان ڈبلیو ہوتا ہے جس کے بعد ایکس اور وائی ٹرینڈ ہوتے ہیں۔

فلیٹ کوریکٹو سوئنگ کی ایک اور قسم ہے۔ یہ 03/03/2005 ہے جس میں سوئنگس کے نام اے بی اور سی ہوتے ہیں۔ سی کی پرائس یا قیمت اے کی نسبت زیادہ ہوتی ہے جو کہ مرکزی سوئنگس کو ری فائن کرنے کے لیے کم میلان ظاہر کرتی ہے۔ اکثر یہ قسم مضبوط اور بھرپور تازہ ترین بنیادی سوئنگس نمبرز 1 3 اور 5 کے پیچھے ہوتی ہے۔ ایک خاص قسم کا فلیٹ فارمیٹ تب وجود میں آتا ہے جب سوئنگ بی 5ویں سوئنگ سے زائد پر بند ہو اور سوئنگ سی بلش ٹرینڈ میں سوئنگ اے سے کم درجے پر موجود ہو۔ کبھی کبھار ایسا بھی ہوتا ہے کہ بی 5ویں سوئنگ پر جا کر بند ہو جائے جب کہ سی اینڈ پوائنٹ اے اینڈ پوائنٹ سے زائد ہو۔

Elliott Waves Theory - A, B and C Corrective Sub-Swings - Bullish and Bearish Pattern

ٹرائی اینگل پیٹرن 3-3-3-3-3 کے 5 مسلسل 3-سیٹ کوریکٹو سوئنگس ہوتے ہیں اور بسا اوقات ذیلی سوئنگ کے کوریکٹو پیٹرن موجود نہیں ہوا کرتے۔ ٹرائی اینگل پیٹرن کی طرح مسلسل لہریں اور سوئنگس سمیٹریکل کو وجود میں لاتے ہیں۔ ڈیسنڈنگ، ایسنڈنگ اور ریورسل سمیٹریکل ٹرائی اینگل فارمیٹس سوئنگس کے نام اے بی سی ڈی اور ای ہوتے ہیں۔ چونکہ یہ قسمیں مسلسل پیٹرنز پر مشتمل ہوتی ہیں اس لیے یہ کوریکٹو پیٹرنز پر موجود ہیں۔ لہر بی کا لہر اے سے بڑا اور طویل ہونا ضروری ہے۔ ذیلی سوئنگس کا فارمیٹ زگ زیگ یا فلیٹ ہوتا ہے۔ بی کے بعد ٹرائی اینگل پیٹرنز یا نمونہ جات کو تخلیق کیا جاتا ہے یا جب چوتھی لہر وجود میں آ جائے۔ ٹرائی اینگل فارمیٹ 9 سوئنگز پر مشتمل ہو سکتا ہے پس رجحان طویل مدت کے بعد وجود میں آئے گا۔

ایک ایسا فارمیٹ بھی ہوتا ہے کہ جس میں بعض کوریکٹو سوئنگ اقسام کو ایک دوسرے کے ساتھ باہم ملایا جاتا ہے۔ یہ مجموعہ زگ زیگ فلیٹ اور ٹرائی اینگل کے ساتھ بیک وقت وجود میں آتا ہے جب کہ کئی فلیٹ پیٹرنز یا نمونہ جات موجود ہو سکتے ہیں تاہم صرف ایک ٹرائی اینگل پیٹرن یا نمونہ ایسا ہوتا ہے جو کہ اس مجموعے کا آخری پیٹرن ہو گا۔ ایک مختصر کمبینیشن پیٹرن کے ڈبلیو ایکس وائی پوائنٹس ہوتے ہیں جب کہ طویل فارمیٹ پر مشتمل پیٹرن کے ڈبلیو ایکس وائی زیڈ پوائنٹس ہوتے ہیں۔ ایلیٹ ویوز ایک پیچیدہ اور مشکل پیٹرن یا نمونہ ہے جس کے سمجھنے کے لیے ٹھوس علم اور کئی برس کی مشق سے کشید کردہ تجربے کا ہونا ضروری ہے۔ پوائنٹس کی تخصیص کاطویل المدت دورانیہء وقت کے حوالے سے ہونا ضروری ہے پس ذیلی سوئنگس کو مختصر دورانیہ وقت کے حساب سے شناخت کیا جا سکتا ہے۔ ایلیٹ ویوز کے پیٹرنز یا نمونہ جات کو شناخت کرنے کے حوالے سے سب سے اہم نکتہ یہ ہے کہ ایسا کرنے کے لیے سوئنگس اور پوائنٹس کی تخصیص سے متعلقہ اہلیت کا ہونا ضروری ہے۔ ایسی کئی ویب سائیٹس موجود ہیں جو انٹرنیٹ پر ایلیٹ ویوز مواد فراہم کرتی ہیں جیسا کہ Elliottwave.com۔

Elliott Waves Theory - Symmetrical, Asymmetrical, Descending and Ascending plus Reversal Symmetrical Triangle

اس کے ساتھ ہی یہ نشست اختتام کو پہنچی۔ اگلی نشست کے ساتھ پھر حاضر ہوں گے، اپنا خیال رکھیے گا۔

Comments

Copyright © 2011-2020 PFOREX.COM | Professional Forex School | Cashback and Rebates