Continuation and Reversal Head and Shoulder Patterns Forex Market

30۔ کنٹنویشن اور ریورسل ہیڈ اینڈ شولڈرز

10 1 Vote
Instructor

30۔ کنٹنویشن اور ریورسل ہیڈ اینڈ شولڈرز

فاریکس تربیتی پروگرام کی تیسویں نشست

فاریکس تربیتی نشست بحوالہ مالیاتی مارکیٹس میں پھر سے خوش آمدید۔ اس نشست میں جاری اور پلٹاؤ ہیڈ

اینڈ شولڈر نمونوں کو تفصیل کے ساتھ زیربحث لایا جائے گا۔ ان نمونہ جات سے متعلق مزید وضاحت سے قبل تاجروں کو بعض ضروری معاملات کو سمجھنا ہو گا۔

نیک لائن ڈاؤن ٹرینڈ

تاجر نیک لائن بائیں کندھے کی ویلی کو دائیں کنڈھے کی ویلی سے جوڑ کر کھینچ سکتا ہے۔ لیفٹ ویلی بائیں کندھے اور سر کے درمیان جب کہ رائیٹ ویلی سر اور دائیں کندھے کے درمیان ہے۔ چونکہ ہیڈ اور شولڈر پلٹاؤ پیٹرن ہے اس لیے یہ فارمیٹ اوپر جاتے رجحان سے وجود میں آتا ہے نتیجے کے طور پر آئندہ آنے والے رجحان نچلی سمت میں ہوں گے کیوںکہ مارکیٹ پرائس نیک لائن کو پار کر لے گی۔

نیک لائن اپ ٹرینڈ

تاجر نیک لائن کو بائیں کندھے کی چوٹی اور دائیں کندھے کی چوٹی کو باہم ملا کر کھینچ سکتا ہے۔ لیفٹ پیک بائیں کندھے اور سر کے درمیان جب کہ رائیٹ پیک سر اور دائیں کندھے کے درمیان ہے۔ چونکہ ہیڈ اور شولڈر کا یہ فارمیٹ نیچے جاتے رجحان کے حوالے سے وجود میں آئے گا، اس لیے قیمت کی پیشگوئی سمت اوپر کی طرف ہو گی جب یہ نیک لائن سے گزر جائے گی۔

Continuation and Reversal Head and Shoulder Patterns - Valley and Downward Trend of Neckline

ایچ ہائیٹ

یہ ایک افقی لائن ہے جو نیچے جاتے رجحان میں ہیڈ سمٹ اور نیک لائن کے درمیان یا ہیڈ باٹم اور نیک لائن کے درمیان ہوتی ہے۔

انٹری پرائس

آرڈر انٹری پرائس وہ نقطہ ہوتا ہے جب نیک لائن مارکیٹ کی قیمت کو پار کرتی ہے۔

وصولی نفع

وصولی نفع ایچ یا ایچ ویلیو کے ہالف یا نصف کے برابر ہے۔

Continuation and Reversal Head and Shoulder Patterns - Trading Entry Price - Take Profit and Stop Loss Price is Height of Pattern

بندش خسارہ

کم ہوتے رجحان کے حوالے سے بندش خسارہ دائیں کندھے کے بلند ترین نقطے سے اوپر ہوتا ہے جب کہ بڑھتے ہوئے رجحان کے حوالے سے بندش خسارہ دائیں کندھے کی ویلی کے تحت رکھا جا سکتا ہے۔

آخری بوسہ

آخری بوسہ یا لاسٹ کِس وہ من پسند نقطہ ہوتا ہے جہاں تاجر آرڈر رکھواتے ہیں۔ ایسا تب ہوتا ہے جب قیمت نیک لائن کراس کرنے کے بعد دوبارہ اس کی طرف پلٹ کر آتی ہے۔ گرافس ہیڈ اور شولڈر کی مختلف نمونوں کی خاصیتیں ظاہر کرتا ہے۔ کسی قدر تخصیص کے ساتھ 3 مختلف پلٹاؤ اقسام ہوتی ہیں

Continuation and Reversal Head and Shoulder Patterns - Downtrend and Uptrend Neckline Exit Price

پہلے گراف پر بڑھتے ہوئے رجحان کے حوالے سے قیمت اوپر کی طرف جاتی ہے حتی کہ بائیں کندھے کے بلند ترین مقام پر پہنچ جاتی ہے۔ پھر معمولی تنزلی کے بعد اوپری رجحان دیکھنے کو ملتا ہے بطرف ہیڈ سمٹ ایک اور تنزلی کے بعد پھر سے اوپری رجحان دیکھنے کو مل جاتا ہے۔ اور آخرکار نیجے جاتا ہوا رجحان نیک لائن کو پار کر جاتا ہے اور پھر نیچے کا رخ کرتا ہے۔ درمیانی گراف ایک اور اوپر جاتے رجحان کی مثال پیش کرتا ہے۔ لیفٹ شولڈر ہیڈ اینڈ رائیٹ شولڈر وجود میں آتے ہیں اور نیک لائن بائیں شولڈر کی ویلی کو دائیں شولڈر کی ویلی سے جوڑ کر اوپر جاتے رجحان کی نسبت سے کھینچی جا سکتی ہے۔ ایچ ایک افقی لائن ہے جو کہ ہیڈ کے سمٹ سے نیک لائن کی طرف جاتی ہے۔ نیک لائن بعض اوقات عمودی ہوتی ہے جب کہ اس میں کثرت سے سلوپ آتے ہیں۔ دائیں طرف اوپر کی سمت موجود گراف دکھاتا ہے کہ نیک لائن گریڈینٹ لائن ہے جس میں تاجر نامناسب اور تاخیر سے دی گئی انٹری قیمت کے باعث آرڈر رکھوانا پسند نہیں کرتے۔

Continuation and Reversal Head and Shoulder Patterns - Bullish and Bearish Neckline

نیچے جاتے موڈ میں نیک لائن بائیں کندھے کی چوٹی کو دائیں کندھے کی چوٹی سے ملا دیتی ہے۔ ایچ افقی لائن ہے جو کہ ہیڈ بوٹم اور نیک لائن کے درمیان واقع ہوتی ہے۔ نیجے کی طرف جاتی نیک لائن بائیں گراف پر ظاہر ہوتی ہے جب کہ اوپر کی طرف جاتی نیک لائن دائیں گراف پر ظاہر ہوتی ہے جس میں تاخیر سے بریک آؤٹ پوائنٹ موجود ہے جو کہ آرڈر رکھوانے کے لیے موزوں نہیں۔ انٹری پوائنٹ بریک آؤٹ قیمت ہے جب کہ قیمت نیک لائن کو پار کر جاتی ہے پس اوپر جاتے رجحان میں تاجر 3 ٹاپ گرافس کے بریک آؤٹ پوائنٹ کے حوالے سے فروختی آرڈر رکھوا سکتا ہے۔ اور 3 بوٹم گرافس مارکیٹ میں نیچے جاتا ہوا رجحان دکھاتے ہیں۔ جس میں تاجر بریک آؤٹ پوائنٹ کے حوالے سے خریداری آرڈر رکھوا سکتا ہے۔ فروختی آرڈرز کے حوالے سے خسارہ بندش دائیں کندھے کے بلند ترین مقام کے اوپر ہوتا ہے جب کہ خریداری آرڈرز کے حوالے سے یہ دائیں شولڈر کی ویلی سے کم تر ہوتا ہے۔

Continuation and Reversal Head and Shoulder Patterns - Breakout Entry Price - Height H is Close Price

ایچ اور دائیں شولڈر کے مابین 3 مختلف اقسام کی نسبتیں ہیں۔ بایاں گراف ایک پیٹرن کو ظاہر کرتا ہے کہ جس میں دائیں شولڈر کی بلندی ایچ/2 کی نسبت کم ہے۔ ہیڈ اینڈ شولڈر کی قسم فروختی آرڈر کو رکھوانے کے حوالے سے بہترین مواقع کی نشان دہی کرتی ہے۔ درمیانی گراف ظاہر کرتا ہے کہ ایچ/2 دائیں شولڈر کی بلندی کے برابر ہے پس ٹی پی اور ایس ایل کی مقدار ایک ہے تاہم یہ مخالف سمت میں ہوتے ہیں۔ دایاں گراف دکھاتا ہے کہ دائیں شولڈر کی بلندی ایچ/2 کی نسبت زیادہ ہے۔ اس قسم میں ایس ایل کی ویلیو ٹی پی سے زیادہ ہے پس

آرڈر رکھوانے کے حوالے سے اس قسم کی سفارش نہیں کی جاتی ہے۔ اکثر اوقات ٹی پی بریک آؤٹ پوائنٹ سے ایچ/2 ویلیوکے فاصلے پر سیٹ ہوتی ہے۔ بایاں-بوٹم گراف نشان دہی کرتا ہے کہ تاجر کے لیے بہترین معاملہ یہ ہے

کہ وہ فروختی آرڈر وہاں رکھوائے کہ جہاں نیک لائن کا رجحان اوپر کی طرف ہو ۔ دایاں-بوٹم گراف واضح کرتا ہے کہ تاجر کے لیے بدترین حالت یہ ہے کہ وہ فروختی آرڈر وہاں رکھوا دے کہ جہاں نیک لائن نیچے کے رخ پر ہو۔

بلش اور بیئرش ہیڈ اینڈ شولڈر پیٹرنز کی شرائط اور طریقہ ہائے کار ایک سے ہوتے ہیں اگر دائیں شولڈر کی بلندی اور ایچ/2 کے مابین تعلق کو مدنظر رکھا جائے۔

کنٹینیول یا مسلسل ہیڈ اینڈ شولڈر

درج ذیل گراف میں کنٹینیول یا مسلسل ہیڈ اینڈ شولڈر کو دکھایا گیا ہے۔ بائیں گراف میں اوپر جاتا رجحان دیکھا جسا سکتا ہے جس کے بعد کچھ تنزلی بھی ہوتی ہے۔ بایاں یا لیفٹ شولڈر ہیڈ اور دایاں یا رائیٹ شولڈر اوپر جاتے رخ پر وجود میں آتے ہیں اور نیک لائن کو پار کرتے ہیں۔ جیس کہ اب واضح ہو چکا ہے کہ اوپر جاتے رجحان کے بعد

Continuation and Reversal Head and Shoulder Patterns - Support and Resistance, Peaks and Valleys

ہیڈ اینڈ شولڈر وجود میں آتے ہیں پس اس پیٹرن کو کنٹینیول کے خانے مین رکھا جاتا ہے۔ دائیں گراف میں مسلسل یا کنٹینول ہیڈ اینڈ شولڈر نیچے جاتے رجحان کے حوالے سے وجود میں آئے ہیں۔ ہیڈ اینڈ شولڈر ایک منفرد پیٹرن ہے جو کہ دونوں یعنی کنٹینیول اور ریورسل فارمیٹ فراہم کرتا ہے۔

تاجر کئی مناسب مثالوں کے حوالے سے ایم ٹی 4 کی پڑتال کر سکتا ہے۔ مثال کے طو پر ریورسل ہیڈ اینڈ شولڈر بھی ہوتا ہے۔ تاجر ٹول بار میں جا کر اپنا خاکہ بحوالہ ٹرینڈ لائن آپشن تشکیل دے سکتا ہے۔ لیفٹ شولڈر کے بعد ہیڈ اور رائیٹ شولڈر سامنے آتے ہیں پس نیک لائن کو بآسانی کھینچا جا سکتا ہے۔ رجحان کی نقل و حرکت کے حوالے سے ایچ لائن پر واقع فائبونیکی پیٹرن کو استعمال کر کے پیشگوئی کی جا سکتی ہے۔ فائبونیکی دکھاتا ہے کہ رجحان ایچ/2 مقدار سے گزر چکا ہے جس کے بعد تنزلی ہوئی تاہم اس نے ایچ مقدار کو بریک آؤٹ پوائنٹ سے پار کیا۔ تاجر کو اپنی تاجرانہ صلاحیت کو نکھارنے کے لیے کافی مشق کرنی چاہیے۔ بہتر ہو گا کہ اس حوالے سے غیر مماثل ہیڈ اور شولڈر پیٹرن تخلیق کیے جائیں جن کو شناخت کرنا مشکل ہو۔

Continuation and Reversal Head and Shoulder Patterns - Fibonacci, Support and Resistance Levels

ایک اور مثال کہ جس میں لانگ لیفٹ شولڈر کے بعد ہیڈ اور مختصر رائیٹ شولڈر سامنے آتے ہیں جس میں نیک لائن اوپر کے رخ پر ہوتی ہے۔ لیفٹ اور رائیٹ یعنی بائیں اور دائیں ویلیز کو باہم جوڑ دیا جاتا ہے۔ اور ایک فائبونیکی پیٹرن تخلیق کیا جاتا ہے جس کا ایچ پر افقی فارمیٹ دیکھا جا سکتا ہے۔ پھر اسے بریک آؤٹ کے حوالے سے کسی اور جگہ رکھا جا سکتا ہے تاکہ ایچ/2 اور ایچ پوائنٹس کو شناخت کیا جا سکے۔ رجحان کا رخ نیچے کی سمت ہو گیا ہے اور اس نے ایچ/2 قیمت کو پار کر لیا ہے۔ اس مثال میں ایک تاجر دیگر مختلف قسم کے ہیڈ اینڈ شولڈر پیٹرن کو کھینچ سکتا ہے تاہم اس کا بریک آؤٹ پوائنٹ کافی تاخیر سے وجود میں لایا گیا تھا۔ ایک مسلسل یا کنٹینیول ہیڈ اینڈ شولڈر پیٹرن کو نیجے جاتے رجحان کی ذیل میں بآسانی کھینچا جا سکتا ہے۔ بائیں اور دائیں ویلییز کو باہم ملا کر نیک لائن کو کھینچا جا سکتا ہے جس کا رخ اوپر کی سمت ہو گا۔ ایک فائبونیکی پیٹرن یا نمونہ تاجر کی مدد کرتا ہے کہ وہ ایچ/2 اور ایچ کی قیمتوں کو بآسانی تلاش کرے جیسا کہ پچھلی مثال میں دکھایا گیا ہے۔ ایچ اور ایچ/2 دونوں کی قیمتیں مارکیٹ کی قیمتوں کو چھو چکی ہیں۔

Continuation and Reversal Head and Shoulder Patterns - H and H/2 on MetaTrader Price Charts

ایک اور مثال ڈی 1 وقت کے دورانیے کے حوالے سے مل سکتی ہے۔ اوپر جاتے رجحان کی ذیل میں ایک مسلسل یا کنٹینیول ہیڈ اینڈ شولڈر کو کھینچا جا سکتا ہے۔ ایک فائبونیکی مثال ایچ لائن میں ملتی ہے۔ تاجر فائبونیکی لائن کی جگہ کو بدل دیتا ہے تاکہ چارٹ پر ہلچل مچنے کے عمل کو روکا جا سکے۔ ایچ/2 اور ایچ کی قیمتیں مارکیٹ کے رجحان کے ذریعے تاخیر سے پہنچتی ہیں۔ ایک سمبل کی کئی مثالیں وقت کے مختلف دورانیوں کے حوالے سے موجود ہیں۔ تاجر ایچ 4 کے وقت کے دورانیے کے حوالے سے ہیڈ اینڈ شولڈر پیٹرن کو تلاش کر سکتا ہے اس لیے اس رجکن کو زیر مطالعہ لانے کے لیے اس کو نشان زدہ کیا جا سکتا ہے۔ لیفٹ شولڈر ہیڈ اور رائیٹ شولڈر کو بآسانی شناخت کیا جا سکتا ہے۔ ایک پیٹرین میں مختلف طول کے شولڈرز ہوتے ہیں پس ہیڈ اینڈ شولڈر غیر مماثل پیٹرن یا نمونہ جات ہو سکتے ہیں۔ ایک اور ریورسل یا پلٹاؤ ہیڈ اینڈ شولڈر کو نیچے جاتے رجحان میں دیکھا جا سکتا ہے۔ پچھلا پیٹرن ایک اوپر جاتی لائن کی صورت میں دیکھا جا سکتا ہے جب کہ موجودہ مثال میں نیک لائن نیچے کے رخ پر ہے۔

اس کے ساتھ ہی یہ نشست اختتام کو پہنچی۔ اگلی نشست کے ساتھ پھر حاضر ہوں گے، اپنا خیال رکھیے گا۔

Comments

Copyright © 2011-2020 PFOREX.COM | Professional Forex School | Cashback and Rebates